Greece will buy More Rafale - How Turkey will React

گریس کے رافال خریدنے پر ترکی نے ایسا کیا کام کیا جو پاکستان کیلئے بھی مددگار ثابت ہوگا؟

گریس ترکی کے درمیان اختلافات موجود ہیں اور ترکی کی ائیر فورس کا مقابلہ کرنے کیلئے جس کے پاس بڑی تعداد میں ایف 16  طیارے ہیں  گریس نے رافال خریدنا شروع کر دیے ہیں، گریس نے فرانس سے 18 رافال طیارے خریدنے کا آرڈر دیا تھا جن میں 12 استعمال شدہ اور چھ نئے ہیں۔ تاہم اب مزید چھ طیارے خریدے جائیں گے, فلحال یہ نہیں بتایا گیا کے یہ چھ طیارے نئے ہوں گے یا استعمال شدہ۔

حال ہی میں ترکی کے صدر طیب اردگان نے اس حوالے سے ایک بیان جاری کیا تھا کہ گریس پرانے طیاروں سے ترکی کا مقابلہ نہیں کر سکتا۔ یاد رہے گریس کے پاس بھی ایف 16 طیارے موجود ہیں جن کی تعداد 154 ہے.

اسی سال جون میں اناطولین مشقوں میں پاکستان اور ترکی کی ائیر فورسز نے حصہ لیا تھا اور ان فضائی مشقوں میں قطری ائیر فورس کو خاص مقاصد کیلئے شامل کیا گیا تھا۔ جو کہ رافال طیاروں سے لیس ہے۔ دراصل ان مشقوں کے ذریعے پاکستان اور ترکی کی ائیر فورسز رافال طیاروں کے خلاف تیاری کرنا چاہتی ہیں۔ ایف سکسٹین کے خلاف رافال ایک خطرناک طیارہ ہے اور پاکستان اور ترکی کے دشمن ملک کے پاس یہ طیارے موجود ہیں۔ ان طیاروں کی خوبیاں اور خامیاں جاننے اور انکے مقابلے میں اپنی ائیر فورسز کو بہتر ہتھیاروں سے لیس کرنے کیلئے پاکستان اور ترکی ایک پیج پر ہیں۔

ترکی اور قطر نے 2020 میں یہ معاہدہ بھی کیا تھا کہ قطر تربیتی مقاصد کیلئے اپنے رافال طیارے پانچ سال کیلئے ترکی میں تعینات کرے گا۔ جس پر گریس کے میڈیا نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ ترکی رافال کا معائنہ کرنا چاہتا ہے۔ تاہم اسکے باوجود گریس مزید رافال خرید رہا ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *