Home / International / بھارت میں آزادی کی تحریکیں کیوں زور پکڑ رہی ہیں؟

بھارت میں آزادی کی تحریکیں کیوں زور پکڑ رہی ہیں؟

یکم جنوری 2018 کو ممبئی میں 3 لاکھہ دلیت اکٹھے ہوئے اور پرسکون جشن منا رہے تھے 1818 کی انگریزوں کی پیشوا سلطنت کی شکست کا, ہوا یوں کہ 1674 سے لیکے 1818 تک انڈیا کے اس خطے پے مرہٹا سلطنت حکومت کرتی تھی جو برہمن ہی تھے.

تو 1818 میں اس پیشوا سلطنت کے اھم رہنما باجی راو پیشوا Baji rao peshwa کو شکست ہوئی تھی انگریزوں کی طرف سے اور انگریزوں کا ساتھہ دیا تھا دلیتوں نے, اس لیئے دلیتوں نے انگریزوں کا ساتھہ دیا تھا کہ اس وقت سے ہی ان دلیتوں کو شدھروں کو نچلی ذات کا سمجھا جاتا تھا, انکے ساتھہ کھانا, پینا اٹھنا بیٹھنا برہمن ہندو حرام سمجھتے ہیں, انکو untouchables کہا جاتا ہے انڈیا میں.

یہی وجہ تھی اس ظلم سے تنگ آکے دلیتوں نے انگریزوں کا ساتھہ دیا اور پیشوا کو شکست ہوئی اور اس اس شکست کا جشن منا رہیے تھے دلیت یکم جنوری کو 4 دن پہلے تو بی جے پی BJP اور دوسرے برہمن ہندوں کے ایک گروہ نے ان پے حملہ کیا کیا, دلیتوں کے لوگ زخمی ہوئے, پولیس کھڑی تھی پر چپ چاپ دیکھتی رہی کچھہ نہ کیا جیسے گجرات میں 2002 میں مسلمانوں کے ساتھہ ہوا تھا.

اب اس حملے کے نتیجے میں انڈیا میں ہنگامے شروع ہوئے ہیں, دلیتوں نے 3 جنوری کو پورے انڈیا میں احتجاج کا اعلان کیا تھا اب تک 150 سے زیادہ دلیتوں کو گرفتار کیا گیا ہے, 2 ہلاک ہوچکے ہیں ,انڈین میڈیا اسکو چھپا رہا ہے کیونکہ انڈیا پے اب بھی صہیونی برہمن کی حکومت ہے, سب سے بڑا دھشتگرد صہیونی برھمن مودی ہے.

آج بھی انڈیا میں ذات پات کا عنصر بہت پایا جاتا ہے, انڈین ہندوں خود کو ان درجوں میں بانٹتے ہیں..

1 برہمن (Priest, Academics ).

یہ خود کو سب سے اونچا سمجھتے ہیں انڈیا میں باقیوں سے, یہ پنڈٹ, وغیرہ یہ صہیونی برہمن سب خود کو سب سے اعلیٰ سمجھتے ہیں باقیوں سے.
Priest, Academics

2 شتری kshatriya.

( warriors ,kings )
یہ خود کو جنگجو, بادشاہ سمجھتے ہیں ہندوں میں.
Kshatriya

3 ویش Vaisya

(Peasant, landowners )
یہ تیسری درجا ہوتا ہے ہندوں میں.
Vaisya

4 دلیت.

5 شدھر.
یہ جو آخری دو درجے ہندوں نے بنائے ہیں خود میں انکو سب سے نچلی ذات کا سمجھا جاتا ہے تقریباً ایک کروڑ سے زیادہ آبادی ہے انکی لیکن انڈیا میں انکو جانوروں سے بدتر سمجھا جاتا ہے.

آج جو انڈیا پے حکومت کر رہیے ہیں یہ برہمن ہندوں ہیں, انکا نظریہ صہیونی یہودیوں کی طرح ہے.

انڈیا ایک ملک نہیں ایک پاگل خانہ ہے جہاں برہمن رہیتے ہیں جو باقی اقلیتوں کو جانور سمجھتے ہیں خوان وہ, دلیت ہو, شدھر ہو, مسلمان ہو, بنگالی ہو, عیسائی ہو, سکھہ ہو, گورکھاز ہو, تاملز ہوں, یا کوئی اور اقلیت ان سب کے ساتھہ انڈیا میں ظلم ہے, تبھی 100 سے زیادہ آزادی کی تحریکیں چل رہی ہیں انڈیا میں.

Share This

About yasir

Check Also

نریندر مودی’ ٹرمپ اور مسلمان

ایک طرف امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکہ میں مسلمانوں کی آمد کو بند اور …