Home / International / آواز کی رفتار سے بھی دس گنا تیز روسی میزائل، تجربہ کامیاب

آواز کی رفتار سے بھی دس گنا تیز روسی میزائل، تجربہ کامیاب

آواز کی رفتار سے بھی دس گنا تیز روسی میزائل، تجربہ کامیاب
روس نے ہائیپر سونک کینزال میزائل کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے۔ آواز کی رفتار سے دس گنا تیز اس میزائل کو روسی صدر پوٹن نے ’ایک بہترین ہتھیار‘ قرار دیا ہے۔
Mig 31

ماسکو کا دعویٰ ہے کہ آواز کی رفتار سے بھی دس گنا تیزی سے اپنے ہدف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھنے والا یہ ہائیپرسونک میزائل کسی بھی طرح کے میزائل ڈیفنس سسٹم کو ناکام بناتے ہوئے اپنے ہدف تک پہنچ سکتا ہے۔

روسی صدر ولادیمیر پوٹن نے رواں ماہ کے آغاز میں اپنے ’سٹیٹ آف دی نیشن‘ خطاب کے دوران متعدد جدید روسی ہتھیاروں کا تعارف کراتے ہوئے کہا تھا کہ یہ ہتھیاروں کی ٹیکنالوجی کو ایک نئی سطح پر لے جائیں گے۔ انہی ہتھیاروں میں ہائپرسونک کینزال میزائل بھی شامل تھے جسے پوٹن نے ’ایک بہترین ہتھیار‘ قرار دیا تھا۔

آج کینزال میزئل کا کامیاب تجربہ کیا گیا۔ روسی وزارت دفاع نے اس تجربے کی ویڈیو فوٹیج بھی جاری کی ہے جس میں اپنے ہدف کو برق رفتاری اور انتہائی کامیابی سے نشانہ بنانے والا یہ میزائل میگ 31 طیارے سے گراتے دیکھا جا سکتا ہے۔

وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا، ’’میزائل نے اپنے ہدف کو نشانہ بنایا سب کچھ منصوبے کے مطابق تھا اور یہ تجربہ انتہائی کامیاب رہا۔”

روس میں رواں ماہ کے آخر میں صدارتی انتخابات منعقد ہو رہے ہیں اور صدر ولادیمیر پوٹن ایک مرتبہ پھر روسی صدر بننے کے امیدوار ہیں۔ ناقدین جدید روسی ہتھیاروں کی تیاری کو صدر پوٹن کی ’انتخابی مہم کا حصہ‘ قرار دے رہے ہیں۔ ہائپر سونک میزائل کے حوالے سے پوٹن کا یہ بھی کہنا تھا گزشتہ برس دسمبر سے ان میزائلوں کی ملک کے جنوبی علاقوں میں تنصیب بھی کی جا چکی ہے۔

روس کے نائب وزیر اعظم دمیتری روگوزین نے فیس بُک پر اپنے ایک پیغام میں لکھا کہ ماسکو حکومت میگ 31 طیاروں کو بھی جدید تر بنانے کے منصوبے پر کام کر رہی ہے۔ ہائپرسونک میزائل اسی لڑاکا طیارے پر نصب کیے جا رہے ہیں۔

Share This

About yasir

Check Also

پاکستان سعودی عرب کی سلامتی کی خاطر کیا کچھ کرسکتا ہے۔

پاکستان میں عسکری اور سیاسی قیادت اس بات پر متفق ہیں کہ یمن میں جو …