Home / International / تین خونی درندے اور شام میں بمباری

تین خونی درندے اور شام میں بمباری

شام میں امریکہ اور اس کے اتحادی ممالک یہاں تک کے روس بھی رہائشی علاقوں پر بمباری کر رہے ہیں جس کے نتیجے میں ہزاروں معصوم جانیں لقمہ اجل بن چکے ہیں، اس بمباری کا شکار کئی معصوم بچے بھی ہو چکے ہیں، شام میں مارے جانے والے بے قصور لوگ مسلمان ہیں اور امریکہ کے نزدیک یہی سب سے بڑا جرم ہے۔

مسلح لوگوں کی موجودگی کا بہانہ بنا کر پورے علاقے کو بمباری سے راکھ میں بدلنا کہاں کی عقلمندی اور انسانیت ہے،فلموں میں جس امریکی فوج کو اتنا انتہائی رحم دل دکھایا جاتا ہے اس فوج کے ہاتھ مسلمان بچوں کے خون سے رنگے ہیں۔ وہ بچے جو ابھی تک بولنا بھی نہیں سیکھے ان بچوں کو بے دردی سے قتل کیا جارہا ہے۔

ظلم کی انتہا یہاں ختم نہیں ہوتی، ان ممالک کی عوام بھی انتہائی ظالم ہے، جو اپنی فوجوں کے کیے گے ظلم کے باوجود ان سے سوال نہیں کرتی ،جب کہ مسلمانوں کو ہی دہشت گرد سمجھتی ہے، یہ لوگ مسلمانوں سے سخت نفرت کرتے ہیں، ان کے نزدیک مسلمانوں کو مارنا ان کا حق ہے۔
Cute Babies

حدیث مبارکہ میں فرمایا گیا ہے کہ جب شام میں فتنہ فساد برپا ہو تو مسلمان اپنی خیر منائیں، اگر غور کیا جائے تو یہ سچ ہے کہ آج تمام غیر مسلم ممالک ایک ہو چکے ہیں اور ان کا نشانہ صرف اور صرف مسلمان ہیں، مگر اس چیز کا مسلمانوں کے پاس کیا حل ہے۔
Muslims Warriors

مسلمانوں کو اپنے حق کے لیے لڑنے کی تلقین کی گئی ہے، مگر افسوس ہوتا ہے کہ ہم مسلمان ایک دوسرے سے ہونے والی زیادتی پر خاموش ہیں،اور بس اپنی اپنی باری کا انتظار کر رہے ہیں، حالانکہ جب کوئی مسلمان اللہ تعالی کی رضا کی خاطر اور اسلام اور مسلمانوں کی خاطر لڑ تا ہے تو جذبہ ایمانی اس کے ساتھ ہوتا ہے، پھر نہ تو دنیا کی کوئی طاقت اسے روک سکتی ہے اور نہ ہی دنیا کا کوئی ہتھیار اسے ہرا سکتا ہے کیونکہ اس کے ساتھ خدا ہوتا ہے۔
jazba

مسلمان جب جب آپس میں اتفاق کے ساتھ کفار سے لڑے تو اللہ تعالی کی ایک خاص مدد ان کے ساتھ رہی، 1965 میں پاک بھارت جنگ میں بھارت نے پاکستان پر جب حملہ کیا تو وہ وقت پاکستانیوں پر کڑا تھا، پاکستانیوں نے خدا کو یاد کر کے کافروں کو جواب دینا شروع کردیا اور پھر دنیا نے دیکھا کہ پاکستان نے اپنے سے چھ گناہ بڑے دشمن کو ایسی دھول چٹائی کے دشمن اپنے ٹینک چھوڑ کر واپس بھاگ گیا۔ پاک فوج کے سپاہیوں کے مطابق میدان جنگ میں انہوں نے محسوس کیا کہ کچھ غیبی طاقت بھی ان کے شانہ بشانہ لڑ رہی تھی۔
tanks

اگر ایک مسلمان ملک کی فوج لڑتی ہے تو خدا اس کا ساتھ دیتا ہے، تو جب پوری امت مسلمہ کفار کے خلاف اٹھ کھڑی ہو اور حق پر بھی ہو تو کیونکر خدا ساتھ نہ دے گا۔ خدا ہم مسلمانوں سے اسی لئے ناراض ہے کیوں کہ ہم نے ایک دوسرے کو چھوڑ دیا ہے، آج اگر ایک مسلمان ملک پر ظلم ہوتا ہے تو دوسرا مسلمان ملک تماشہ دیکھتا ہے، حالانکہ کے اس کو یہ پوری طرح سے علم ہے کہ اس کے بعد اسکی اپنی باری بھی آنی ہے۔

امریکہ اور اس کے اتحادی ممالک کا طریقہ واردات یہ ہے کہ وہ مسلمان ممالک میں پہلے پراکسی وار کرواتے ہیں، جس کے بعد اس ملک میں فسادات پھوٹتے ہیں، اور بالاآخر امریکہ کو اس ملک میں اپنی فوج بھیجنے کا جواز مل جاتا ہے، ہم مسلمانوں کو یہ بات سمجھ لینی چاہیے کہ اب بہت ہو چکا اب ہمیں ان غیر مسلم ممالک میں پراکسی وار کرنی ہوگی۔
pakistan

یاد رہے پاکستان کی خفیہ ایجنسیاں پراکسی جنگ کا زبردست تجربہ رکھتی ہیں، اور اس قابل ہیں کہ دوسرے مسلم ممالک کی ایجنسیوں کو ٹریننگ دے سکیں، پاکستان کی افواج گوریلا وارفیئر میں بھی اپنا ثانی نہیں رکھتیں، پاکستان دنیا کا سب سے چھوٹا ایٹمی ہتھیار بھی بنا چکا ہے، اور اس وقت اگر دیکھا جائے تو مستقبل میں یہ تمام غیر مسلم ممالک پاکستان کا رخ کریں گے، جس کے لیے بطور عوام ہمیں تیار رہنا ہوگا، یہ نہ ہو کے شامیوں کی طرح ہم بھی مارے جائیں۔

ہماری افواج بے شک دنیا کی بہترین افواج ہیں،مگر ہماری افواج کی پشت پر ہماری قوم کو 1956 کی طرح ایک بار پھر آپس کے اختلافات کو بھول کر ایک ہونا پڑے گا، ان غیر مسلم ممالک کا ہدف سب سے پہلے مسلمان فوج ہوتی ہے, جسے ختم کرنے کے بعد یہ کفار ممالک اطمینان سے اس مسلمان ملک کی عوام کو مارتے ہیں۔ عراق لیبیا اور شام کی مثالیں آپ کے سامنے ہیں۔
jago

About yasir

Check Also

ترکی کا امریکہ کو بھرپور جواب – ترک معاشی جنگ اور آئی فون

ترکی میں لاکھوں لوگ آئی فون استعمال کرتے ہیں. آئی فون بڑی تعداد میں امریکہ …