Home / Pakistan Army / پاکستان کے برق میزائل کی خصوصیات

پاکستان کے برق میزائل کی خصوصیات

آپ نے برق میزائل اور براق ڈرون کے بارے میں تو سنا ہوگا، جی ہاں یہ دونوں ہتھیار پاکستان نے خود تیار کیے ہیں، اور آج آپکو براق ڈرون سے فائر کیے جانے والے برق میزائل کے بارے میں بتایا جائے گا۔
pakistan New Drone

برق میزائل کا کامیاب تجربہ پاکستان نے 2015 میں کیا، اس میزائل کو پاکستانی ساختہ ڈرون براق سے فائر کیا گیا، اس میزائل نے چلتے ہدف کو نہایت کامیابی سے اپنا نشانہ بنایا۔ اس دن پاکستان نے انتہائی زبردست کامیابی حاصل کی تھی، کیونکہ یہ پاکستان کا پہلا مسلح ڈرون تھا۔

دہشت گردی میں کمی لانے کے لیے پاکستان کو مسلح ڈرونز کی اشد ضرورت تھی، پاکستان مسلح ڈرون امریکا سے خریدنا چاہتا تھا مگر امریکا اپنے ڈرون پاکستان کو بیچنے پر رضامند نہیں تھا، لہذا پاکستان نے خود ملکی سطح پر ایسا ڈرون بنانے کا ارادہ کیا، ڈرون پروجیکٹ شروع کرتے ہی اس سے فائر ہونے والے میزائل کو بھی پاکستان میں بنانے کی تیاریاں شروع کردیں گئیں۔
NESCOM

انتہائی قلیل مدت میں ایسا ڈرون اور میزائل تیار کرلیا گیا جس کے بعد پاکستان کو امریکی ڈرونز کی ضرورت نہیں رہی، براق ڈرون ایک ہی وقت میں دو برق میزائل لے جا سکتا ہے، پاکستان آرمی نے ان دونوں ہتھیاروں کو شمالی وزیرستان میں بھی آزمایا ہے، اور اس میزائل کی کارکردگی سے پاکستان آرمی پوری طرح سے مطمئین ہے۔

پاکستان کے برق میزائل کی رینج 8 سے 10 کلومیٹر ہے، اس میزائل کی رینج براق ڈرون کے ایویونکس کو مدنظر رکھتے ہوئے رکھی گئی ہے، یاد رہے امریکا کا ہیلفائر میزائل جو کہ امریکی افواج اپنے ڈرونز سے بھی فائر کرتی ہیں کی رینج 8 کلو میٹر ھے۔ برق میزائل اپنے نام کی طرح برق رفتار بھی ہے اسکی حدف پر جھپٹنے کی رفتار “Mach1.1” ہے.
Pakistan Testing New UAV

یہ ایک لیزر گائیڈیڈ میزائل ہے، اور اس میں سنگل سٹیج راکٹ موٹر نصب کی گئی ہے، اس میزائل کو نہ صرف خشکی پر بلکہ سمندر میں موجود اہداف کو بھی تباہ کرنے کیلئے استعمال کیا جاسکتا ہے.

یاد رہے بھارت جیسا ملک بھی ایسے ہتھیار ملکی سطح پر بنانے میں اب تک ناکام رہا ہے،بھارت نے ایسے جتنے بھی پروجیکٹ شروع کیے وہ سب کے سب بری طرح ناکام ہوئے، جس کے بعد بھارت نے اسرائیل سے جاسوسی کرنے والے ڈرون خریدے، اسرائیل کا دعویٰ تھا کہ یہ ڈرون مار گرانے کی صلاحیت پاکستان نہیں رکھتا، بھارت نے یہ ڈرون حاصل کرنے کے بعد پہلا ڈرون لاہور کی طرف سے پاکستان کے فضائی حدود میں بھیجا، جیسے حدود میں داخل ہوتے ہیں پاکستانی فضائیہ کے ایف سولہ طیارے نے مار گرایا تھا۔
Indian drone ProjectIndian israel drone

اس واقعہ کے بعد بھارت نے اسرائیل سے یہ معاہدہ ختم کردیا، اس کے بعد بھارت امریکہ سے جدید ڈرون حاصل کرنے کا خواہش مند ہے، اور اطلاعات کے مطابق امریکہ کچھ یونٹس بھارت کو فروخت کرچکا ہے۔
American Drone For India

Share This

About yasir

Check Also

کیا واقعی جنرل ضیاء الحق امریکی آلہ کار تھے؟

پاکستان میں آج بھی ایسے لوگوں کی کمی نہیں جو جنرل ضیاء الحق کو امریکی …