Home / International / بھارتی میزائل ڈیفنس سسٹم اور پاکستانی بیلسٹک میزائل

بھارتی میزائل ڈیفنس سسٹم اور پاکستانی بیلسٹک میزائل

 ڈاکٹر ثمر مبارک مند کے مطابق جب بھی کسی ملک میں کوئی میزائل ٹیسٹ ہوتا ہے تو پوری دنیا کے سیٹلائٹ اس تجربے پر نظر رکھتے ہیں اور اس مزائل کی صلاحیت اور درستگی مانیٹر کی جاتی ہے۔

آج تک پاکستان کے جتنے بھی میزائل ٹیسٹ ہوئے ہیں امریکہ، برطانیہ، روس، چین سمیت پوری دنیا نے اپنے سیٹلائٹس کی مدد سے دیکھا ہے کہ وہ عین اپنے نشانے پر لگے جبکہ بھارت کا کوئی بھی میزائل آج تک اپنے نشانے پر نہیں لگا اور یہ بات پوری دنیا جانتی ہے۔

اس بات کا اقرار بھارتی میڈیا خود بھی کرچکا ہے کہ بھارت کا کوئی بھی میزائل ٹھیک طرح سے حدف تک پہنچنے کی اہلیت نہیں رکھتا۔

سوچنے کی بات یہ ہے کہ جس ملک کے اپنے زمین سے زمین پر مار کرنے والے تمام عام میزائل صحیح نشانہ پر پہنچنے میں ناکام رہے ہیں تو وہ ملک میزائل شکن نظام “جسے بنانا عام میزائلوں کی نسبت کئی گناہ مشکل اور پیچیدہ ترین کام ہے” بنانے کا اہل کیسے ہو سکتا ہے؟

اگر موجودہ حالات پر ایک نظر دوڑائی جائے تو کافی چھان بین کے بعد ایک بات سمجھ میں آتی ہے کہ یہ نظام یقیناً امریکہ اور اسرائیل نے بھارت کو مہیا کیا ہے جس پر بھارت نے طاقت کے توازن میں بگاڑ پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔

یہاں یہ بات بھی بتاتا چلوں کے روسی تجزیہ کاروں نے 2015 میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ بھارت اگلے دس سال تک پاکستانی بیلسٹک میزائلوں کو نہیں مار گرا سکتا۔ یاد رہے بھارت کا ہر تیسرا ہتھیار روس سے درآمد شدہ ہے اور روس بھارتی دفاعی نظام کو بہت بہتر طریقے سے جانتا ہے۔

About yasir

Check Also

ترکی کا امریکہ کو بھرپور جواب – ترک معاشی جنگ اور آئی فون

ترکی میں لاکھوں لوگ آئی فون استعمال کرتے ہیں. آئی فون بڑی تعداد میں امریکہ …