Home / Pakistan Army / پاکستان لیزر ہتھیاروں والے مملک کی صف میں شامل

پاکستان لیزر ہتھیاروں والے مملک کی صف میں شامل

دنیا کا سب سے جدید ترین ہتھیار لیزر ویپن کے نام سے جانا جاتا ہے.
اب تک صرف چند ممالک ہی یہ ٹیکنالوجی حاصل کر پاے ہیں ان ممالک میں امریکا اور چین سرفہرست ہیں.

لیزر ہتھیار کئی طرح کی شکلوں میں موجود ہیں. جن میں لیزر گنز اور لیزر ائیرڈیفنس سسٹم کو سب سے عام سمجھا جاتا ہے, لیزر انرجی کی ایک شعاع کا نام ہے اگر انرجی کو بڑھا دیا جائے تو یہی لیزر بطور ہتھیار استعمال کیا جا سکتا ہے.
Laser weapons latest

پوری دنیا میں لیزر کو رائفلز کے ساتھ منسلک کیا جاتا تھا تا کہ ٹھیک ٹارگٹ پر گولی چلائی جا سکے. لیکن اب لیزر کو اس شکل میں ڈھالا جا رہا ہے کہ لیزر کے ساتھ رائفل کی ضرورت نہیں پڑتی کیونکہ کہ اکیلا لیزر ہی ٹارگٹ کو سوراخ کر ڈالتا ہے.

امریکا اور چین کی افواج کے پاس لیزر گنز موجود ہیں جو کہ کئی کلوواٹ انرجی کے حامل لیزر شعاع خارج کرتی ہیں. حال ہی میں چین نے اپنی نیوی میں ایسے لیزر سسٹم کا تجربہ کیا ہے جو کہ 1.6 کلومیٹر کی رینج تک پرواز کرنے والی کسی بھی چیز خصوصاً ڈرون طیاروں کو فضا میں ہی جلا کر راکھ کر سکتا ہے.

چین کے علاوہ برطانیہ اور روس بھی اس نظام کا تجربہ کر چکے ہیں. پاکستان نے جنرل کیانی کے دور میں پہلی بار ٹینکوں کو جام کرنے والے لیزر کا کامیاب تجربہ کیا. یہ لیزر کسی بھی ٹینک کے انجن کو جام کر سکتا ہے. پاکستان اور انڈیا کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ دونوں ممالک لیزر ویپنز کے لیے بڑی حد تک دوڑ دھوپ کر رہے ہیں.

لیکن یہ ہتھیار مہنگے ہیں اور دوسرا ان کی رینج بہت کم ہوتی ہے. لیزر سے نکلنے والی ریڈی ایشن میں 50 سے 200 کلوواٹ کی انرجی ہوتی ہے جو کسی بھی لوہے یا سٹیل کو پگھلا سکتی ہے. دوسرے الفاظ میں لیزر ویپن کی رینج میں آنے والے ٹارگٹ کا بچنا نا ممکن ہوتا ہے.
Laser Weapon Test

 

About yasir

Check Also

کیا واقعی جنرل ضیاء الحق امریکی آلہ کار تھے؟

پاکستان میں آج بھی ایسے لوگوں کی کمی نہیں جو جنرل ضیاء الحق کو امریکی …