Home / Pakistan Army / بھارت پاکستان کے بیلسٹک میزائل نہیں مار گرا سکتا

بھارت پاکستان کے بیلسٹک میزائل نہیں مار گرا سکتا

“بیلسٹک میزائل”

جارحیت اور دفاع کے لیے تیر اور تلوار کے دور کے بعد بارود کا دور شروع ہوا جو کہ میزائل کی ایجاد پر ختم ہوا, لیکن طاقتور ممالک میں انسانیت شاید کہیں کهو سی گئی ہے اسلیئے وہاں یہ سفر ابهی بهی جاری ہے.

بیرونی قوتوں سے دفاع کے لیے سب سے پہلے میزائل بنانے والے مسلمان حکمران ٹیپو سلطان تهے جنہوں نے ایک ایسا میزائل بنایا تها جو تقریبا ایک کلومیٹر کی رینج کا حامل تها. میزائل کو بارود سے بهر کر فیتے کی مدد سے آگ لگائی جاتی تهی ان کے لیے خاص عملہ ریاست سے بهرتی کیا جاتا تها.ریاست میسور میں اس وقت دنیا کی بہترین بندوقیں بهی بنائی جاتی تهیں.

دوسری جنگ عظیم میں محدود پیمانے پر میزائل کو پہلی بار استعمال کیا گا. کولڈ وار کے دوران روس اور امریکہ کی ہتهیاروں کی جنگ نے پوری دنیا کو اس فیلڈ میں لاکهڑا کیا.

میزائلز کو خصوصیات کی بنا پر کئی اقسام میں تقسیم کیا جاتا ہے جس میں سب سے بڑی قسم بیلسٹک میزائل کے نام سے جانی جاتی ہے.

عمومی طور پر بیلسٹک میزائل ایک گول سطحی ٹیوب پر مشتمل ہوتا ہے جس کی بہت سی سٹیج ہو سکتی ہیں.سب سے اوپر والے مخروتی حصے میں ایٹم بمب یا بارود رکها جاتا ہے.

بیلسٹک میزائل پرواز بهرنے کے بعد بغیر کسی انسانی کنٹرول کے بلندی کی طرف سفر کرتا ہے اور ایک خاص اونچائی پر پہنچ کر اپنے حدف کی طرف پلٹتا ہے.اپنے حدف کے اوپر پہنچ کر میزائل کے اگلے حصے میں موجود ایٹم بمب ایکٹیو ہو جاتا ہے جو کہ زمین سے 600 میٹر یا 800 میٹر کی بلندی پر آ کر پهٹ جاتا ہے.

پوری دنیا میں بے شمار ممالک کے پاس ایسے میزائل موجود ہیں لیکن پاکستان دنیا کا وہ چوتها ملک ہے جس کا ابابیل بیلسٹک میزائل ایک ساتھ 4 یا 6 ایٹم بمب لے جا سکتا ہے.جبکہ پوری دنیا میں پاکستان وہ تیسرا طاقتور ملک ہے جس کے پاس میدان جنگ میں استعمال ہونے والے بیلسٹک میزائل (نصر) بهی موجود ہیں.

بیلسٹک میزائل کو مار گرایا جا سکتا ہے لیکن دنیا کا موجودہ کوئی بهی دفاعی نظام نصر اور ابابیل بیلسٹک میزائل کو روک نہیں سکتا.

یاد رہے بهارت شاہین تهری بیلسٹک میزائل کے توڑ کے لیے کئی ارب روپے سے جدید روسی ساختہ ائیرڈیفنس خرید رہا ہے لیکن اس ائیر ڈیفنس کا توڑ پاکستان نے چند ماہ قبل رعد سٹیلتھ کروز میزائل کی صورت میں نکال لیا تها جو کہ ائیر ڈیفنس کے ریڈار میں نظر نہیں آتا.
Pakistan RAAD 2 Missile

اس وقت پاکستان کی بقا کے لیے یہ سارا نظام کافی ہے.

Share This

About yasir

Check Also

کیا واقعی جنرل ضیاء الحق امریکی آلہ کار تھے؟

پاکستان میں آج بھی ایسے لوگوں کی کمی نہیں جو جنرل ضیاء الحق کو امریکی …