Home / Pakistan Army / پاکستان آرمی کے زیر استعمال شارٹ رینج ملٹی بیرل راکٹ لانچرز

پاکستان آرمی کے زیر استعمال شارٹ رینج ملٹی بیرل راکٹ لانچرز

پاکستان آرمی کے زیر استعمال شارٹ رینج ملٹی بیرل راکٹ لانچرز میں شامل ٹائپ-63 ملٹی بیرل راکٹ لانچر پاکستان کا بہترین شارٹ رینج راکٹ سسٹم ہے, یہ سسٹم 80، کی دهائی میں پاکستان آرمی میں شامل کیے گئے تهے جبکہ ان کا ابتدائی ورژن 1960 میں ہی چائنہ بنا چکا تها.

اس سسٹم کو کئی مراحل سے گزارا گیا اور ان کی اپگریڈیشن ہوتی رہی یہاں تک کہ اسے چین نے اپنی نیوی کے بحری جنگی جہازوں پر بهی استعمال کیا.یہ شاید دنیا کا پہلا واقعہ تها کہ ایک چهوٹے راکٹ سسٹم کو نیوی فریگیٹ پر فریگیٹ کے دفاع کے لیے کامیابی سے استعمال کیا گیا اور ابهی تک استعمال کیا جا رہا ہے جبکہ چائنہ کی زمینی افواج اس سسٹم کو تقریبا ریٹائر کر چکی ہیں.

انتہائی چهوٹی جسامت کا ہونے کی وجہ سے اس ملٹی بیرل راکٹ نظام کو کسی بهی موبائل پر رکھ کر ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جایا جا سکتا ہے. یہ107 ایم ایم شارٹ رینج راکٹ سسٹم 12 راکٹ ٹیوبس پر مشتمل ہوتا ہے جو کہ 9 کلومیٹر تک راکٹ فائر کرتی ہیں.یہ سسٹم ایک منٹ میں تمام 12 راکٹ داغ سکتا ہے جبکہ اسکے ایک راکٹ کی جسامت ایک ٹینک کے گولے جتنی ہی ہوتی ہے.

پاکستان اب تک نامعلوم مقدار میں یہ راکٹ لانچر سروس میں شامل کر چکا ہے. پاکستان آرمی نے یہ ہتهیار بهارتی سرحد کے ساتھ نصب کیے ہیں تا کہ ممکنہ بهارتی جارحیت کی صورت میں تیزی سے بهارتی پیش قدمی روکی جا سکے. پاکستان کا یہ ہتهیار اس حوالے سے بهی اہم ہے کہ ہنگامی صورت میں اکیلا سپاہی اس سسٹم کو آپریٹ کر سکتا ہے. جبکہ اس کا راکٹ اگر نشانے پر داغا جائے تو دشمن کے بڑے سے بڑے ٹینک کے پرخچے اڑ جاتے ہیں.

دوسرے الفاظ میں یہ نظام دشمن کے لیے پاک آرمی کا بےرحم قاتل سمجها جا سکتا ہے.
Pakistan Army Lethal Weapons

Share This

About yasir

Check Also

پاک فوج کے آفیسرز کو تربیت نہ دینے پر امریکہ کو کیا نقصانات اٹھانا پڑینگے

امریکا کی طرف سے پاکستانی فوج کی ملٹری ٹریننگ پروگرام کی فنڈنگ کم کرنے پر …