Home / News / امریکی ساختہ ٹومو ہاک میزائل کے بارے میں دلچسپ حقائق

امریکی ساختہ ٹومو ہاک میزائل کے بارے میں دلچسپ حقائق

دنیا کا خطرناک ترین ہتھیار”Tomahawk” کروز میزائل, اس میزائل کو یہ عجیب و غریب نام کیوں دیا گیا ؟ حیران کن انکشاف ‎

کیا آپ جانتے ہیں سپرپاور امریکہ کے خطرناک ترین ہتھیار “Tomahawk” کروز میزائل جسے اس نے ہر اہم جنگ اور خطرے کے دوران استعمال کیا اس کا نام کا ماخذ کیا ہے اور اسے یہ نام کیوں دیا گیا ،آئیں ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ “Tomahawk” دراصل ایک

دستی کلہاڑی کا نام ہے جو ریڈ انڈین قبائل دوران جنگ، شکار اور مختلف امور سر انجام دینے کیلئے استعمال کرتے تھے۔کیونکہ اس کلہاڑی کے کئی استعمال تھے اور اس کلہاڑی کے پچھلے حصے پر ایک چھوٹی ہتھوڑی بھی بنی ہوتی تھی اس لئے اس کے کثیر المقاصد استعمال کی وجہ سے کروز میزائل کا نام “Tomahawk” کروز میزائل رکھا گیا کیونکہ
Tomahawk Missile

یہ میزائل بھی کثیر المقاصد استعمال رکھتا ہے جو کہ روایتی اور غیر روایتی ہتھیار لے جانے کے علاوہ ہر طرح کے موسمی حالات اور زیادہ بلندی اور کم بلندی پر اپنے ہدف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔اس میزائل کا استعمال امریکہ نے خلیج جنگ اول اور دوئم میں بھی کیا,

ا “Tomahawk” میزائل کو زمین اور سمندر سے فائر کیا جا سکتا ہے اس مزائل کی رینج زیادہ سے زیادہ 1300 کلومیٹر تک ہے,

یاد رہے پاکستان کا بنایا ہوا بابر کروز میزائل بھی ٹیکنالوجی اور کارکردگی کے لحاظ سے امریکی ساختہ”Tomahawk” جیسا ہی ہے، بابر کروز میزائل کے تین ورژن بنائے جا چکے ہیں، جن میں زمین سے زمین، زمین سے سمندر اور سمندر سے زمین پر مار کرنے والے میزائل شامل ہیں،
Pakistani Missile vs American Missile

امریکی نیوی میں “Tomahawk” میزائل کو خاص اہمیت حاصل ہے، کچھ عرصہ پہلے امریکی نیوی نے شام میں جنگی جہازوں کے اڈوں پر تقریبا 59 “Tomahawk” میزائل داغے تھے جس کے نتیجے میں وہاں کھڑے ہوائی جہاز مکمل طور پر تباہ ہو گئے تھے۔

Share This

About yasir

Check Also

جدہ میں امریکی قونصل خانے کے قریب حملہ کرنے والا پاکستانی نہیں بھارتی تھا

حکومت کے اہلکاروں نے کہا ہے کہ 2016 میں سعودی عرب کے جدہ میں امریکی …