Home / Defence / AN/TPQ 36 پاک آرمی کے زیر استعمال فائر فائنڈر راڈار

AN/TPQ 36 پاک آرمی کے زیر استعمال فائر فائنڈر راڈار

جدید جنگ جہاں ایک لڑائی ہے وہاں ایک دلچسپ گیم کی طرح ہے ۔ اب پرانے زمانے کی طرح او پی یا فارورڈ او پی کی بجائے ایک اور دلچسپ سسٹم بھی ساتھ ہوتا ہے جو کہ ہر لمحہ اس گیم کے حالات کو بدلنے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ آرٹلری جنگ میں جہاں توپیں ٹینک اور ملٹی لانچ راکٹ سسٹم ہوتے ہیں وہاں آرٹلری فائنڈنگ اینڈ لوکیٹنگ راڈار بھی ساتھ ہوتا ہے ۔ جو دشمن کی طرف سے آنے والے ہر راکٹ پروجیکٹائل اور گولے کو لوکیٹ کرتا ہے ۔ اور اس جگہ کی لوکیشن بتاتا ہے جہاں سے یہ سب کچھ فائر کیا رہا ہوتا ہے

عین اسی جگہ پر کاونٹر فائر کر کے دشمن کے ان ہتھیاروں کو خاموش کرایا جاتا ہے۔ امریکی کمپنی ریتھیوں کا بنا ٹی پی کیو 37 بھی ایسا ہی ایک سسٹم ہے ۔ یہ لانگ رینج موبائل لوکیشن فائنڈنگ راڈار ہے ۔ اور ساتھ میں اپنی طرف سے فائر کیے جانے والی آرٹلری کو بھی صحیح لوکیشن پر فائر کرنے کی راہ دکھاتا ہے ۔ یہ 90 ڈگری تک اور 24 کلو میٹر تک آنے والی ہر بلا کی خبر لوکیشن اور اس کے نشانے کو بتاتا ہے ۔ اس طرح فیلڈ کمانڈر کو پوری صورت حال سے باخبر رکھتا ہے ۔ یہ راڈار ایک وقت میں 99 ٹارگٹس پر نظر رکھتا ہے ۔ تھری فیز کا یہ راڈار فی منٹ 32 کے ڈبلیو استعمال کرتا ہے ۔

پاکستان آرمی نے 36 راڈارز خریدے ہیں اور ان کو آرٹلری رجمنٹس میں نہایت اہمیت دی جاتی ہے ۔ یہ راڈار پاکستان کو سیاچن اور کشمیر میں آرٹلری فائرنگ کے دوران کور دیتا ہے اس نے دوسری طرف فائر کیے جانے والی آرٹلری سے کم سے کم سول نقصان ہوتا ہے ۔ ان راڈاروں کو موبائل رکھ کر ان کی لوکیشن تبدیل کی جاتی رہتی ہے تا کہ یہ دشمن کے حملے میں محفوظ رہیں ۔

Share This

About yasir

Check Also

جنگ ستمبر لاہور محاذ کے آخری مناظر کچھ اپنوں اور کچھ غیروں کی زبانی

بین الاقوامی شہرت یافتہ امریکی ہفت روزہ ٹائمز کے نمائندے لوئس کرار نے 23 ستمبر …