Home / Pakistan / پاکستان کو غداروں سے خطرہ

پاکستان کو غداروں سے خطرہ

حال ہی میں نواز شریف نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ ممبئی حملوں میں پاکستان ملوث ہے اور دہشتگرد پاکستان سے گئے تھے، یہاں سے جا کر 150 لوگوں کو مار دیا گیا، حالانکہ ممبئی حملوں میں کوئی بھی پاکستانی ملوث نہیں تھا، یہ حملہ بھارت کا خود ساختہ تھا جس کا مقصد پاکستان پر الزام لگا کر پوری دنیا میں بد نام کرنا تھا، مگر آج تک بھارت دنیا کے سامنے یہ ثبوت پیش نہیں کر پایا کہ ان حملوں میں پاکستان ملوث تھا۔

مگر پاکستان کے تین بار وزیراعظم بننے والے جناب نواز شریف نے یہ کہہ کر کہ بھارت میں کیئے گئے حملوں میں پاکستانی ملوث تھے بھارت کو ایک بار پھر دنیا کے سامنے پاکستان کو بدنام کرنے کا موقع دے دیا ہے بھارت کے پاس بہت بڑا ثبوت آچکا ہے، ظاہر ہے اس سے بڑا ثبوت اور کیا ہو گا کہ ملک کا تین بار وزیر اعظم بننے والا یہ کہہ دے کہ اس دہشتگردی کے پیچھے پاکستان ہے۔

نواز شریف کو ممبئی حملوں میں مرنے والے ان 150 لوگوں کا افسوس ہے مگر پاکستان میں آرمی پبلک سکول میں شہید کئے گئے ان بچوں کا خیال نہیں آیا جنہیں بھارت نے بے دردی سے شہید کروایا، ان بچوں کو شہید کرنے والے دہشتگرد افغانستان میں بیٹھے بھارتیوں سے ہدایات لے رہے تھے، اور پاکستان کے پاس ٹھوس شواہد موجود ہیں کہ اس حملے کے پیچھے بھارت ملوث تھا۔

جب پاکستان کی خفیہ ایجنسی نے بھارتی نیوی کا حاضر سروس اور را کا ایجنٹ کلبھوشن یادیو پکڑلیا تو بھارت نے پاکستان سے سرعام یہ کہا کہ ہم آپکو پشاور اے پی ایس سکول پر کئے گئے حملے میں ملوث دہشتگرد آپ کے حوالے کردیں گے مگر آپ کو کلبھوشن یادیو ہمارے حوالے کرنا ہوگا۔

بھارت کلبوشن کے بدلے وہ دہشت گرد پاکستان کو دینا چاہتا تھا جن دہشت گردوں نے معصوم بچوں اور اساتذہ کو مارا، جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ وہ دہشت گرد بھارتی ایجنڈے پر کام کر رہے تھے اور انہیں بھارت کی طرف سے بھیجا گیا تھا۔ مگر نواز شریف کو بھارت سے اتنی محبت ہے کہ پاکستان پر کیے گئے ستم نظر ہی نہیں آتے۔

آج پوری دنیا کا میڈیا یہ دکھا رہا ہے کہ پاکستان کے سابقہ وزیراعظم نے یہ مان لیا ہے کہ اس دہشتگردی کے پیچھے پاکستان تھا، ذرا سوچیں پوری دنیا ہم پاکستانیوں کے بارے میں کیا سوچ رہی ہوگی، جب اپنے گھر کا بندہ الزام لگا دے تو دوسرے اس پر یقین کرلیتے ہیں۔

پاکستان کو پہلے ہی  بہت سی مشکلات کا سامنا ہے، ایک طرف امریکا پاکستان پر بار بار یہ الزام لگا رہا ہے کہ پاکستانی فوج دہشتگردوں کو پال رہی ہے اور دوسری طرف بھارتی حکومت خود اپنے ملک میں حملے کرواتی ہے تاکہ پاکستان اور اسکی فوج پر الزام لگایا جا سکے اور امریکہ کے الزام کو سچ ثابت کیا جا سکے۔

سابقہ بھارتی آرمی چیف جنرل بکرم سنگھ کھلے لفظوں میں یہ کہتے پائے گئے کہ ہمیں پاکستانیوں کا خون بہانا ہوگا، پاکستان میں دہشت گردی کرنا ہوگی، بلوچستان میں اپنے پنجے گاڑھنا ہوں گے، یہ ساری باتیں اگر میں بطور عوام جانتا ہوں تو میرے خیال میں میرے ملک میں تین بار وزیراعظم بننے والے نواز شریف کو بھی ضرور پتہ ہوں گی۔

نواز شریف آپ ان 150 بھارتیوں کو چھوڑئیے، ان کی فکر کرنے والے ان کے اپنے بہت ہیں ،اس عوام کی فکر کریں جس عوام نے آپ کو اقتدار دیا، عوام کے ہزاروں بچے بلاوجہ مارے گئے، کچھ دہشت گردی کی نذر ہوئے، کچھ آپ کے ہوتے ہوئے بھوکے مرے، بہت سے یتیم ہوئے، اور بہت سی ماؤں کے لال اس دنیا سے چلے گئے۔

آپکو اقتدار صرف سڑکیں بنانے کے لئے نہیں دیا گیا تھا، بلکہ ہر سطح پر پاکستان کا دفاع کرنے کے لئے دیا گیا تھا، آپ کلبوشن یادیو کے معاملے پر کیوں نہیں بولے، آپ نے اے پی ایس سکول حملے پر بھارت کو کیوں نہیں مخاطب کیا، آپ نے واجپائی کو کشمیری مجاہدین کی انفارمیشن کیوں دی، واجپائی نے خود کہا کہ ہمیں کشمیری مجاہدین کا پتہ ہی نہیں تھا کہ وہ کہاں کہاں موجود ہیں مگر نواشریف نے ان مجاہدوں کے کیمپوں کے بارے میں ہمیں بتایا۔

کارگل جنگ میں اگر پاکستانی فوج غلطی پر تھی تو پھر بھی آپ کا کام بطور وزیراعظم یہ تھا کہ اپنی فوج کی پشت پر کھڑے ہو جاتے، اور بھارت کو کہتے کہ ہم حق پر ہیں اگر پاکستان کے ساتھ جنگ کی تو یہ چھ لاکھ کی فوج اپنی 13 کروڑ عوام کے ساتھ بارڈر پر موجود ہوگی۔ کیا آپ نہیں دیکھتے کہ بھارتی آرمی کشمیر میں کیا کر رہی ہے مگر بھارتی وزیراعظم پھر بھی اپنی فوج کی پشت پناہی کر رہا ہے؟

آپ پاکستانی فوج کی پشت پناہی کیا کریں گے آپ تو پاکستان کی فوج کو راز افشا کرنے کی دھمکیاں دیتے ہیں، بھارت کو یہ کہتے ہیں کہ ہاں ہم نے آپ کی پیٹھ میں چھرا گھونپا، ایسا کہنے سے توہین آپ کی نہیں بلکہ ہم پاکستانیوں کی ہے، کیا ہم پیٹھ میں چھرا گھونپنے والے ہیں یا سینے پر گولی کھانے والے؟

آپ نے ہمیشہ پاکستان پر بھارت کو فوقیت دی، قوانین کو توڑتے ہوئے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی اور اس کے ساتھ را کے آفیسرز کو بنا ویزے کے پاکستان کی سر زمین پر اترنے دیا، یہ پاکستان کی توہین ہے، اللہ بھلا کرے پاکستان کی فوج کا جس نے کلبوشن یادیو کا معاملہ فوجی عدالت میں چلایا ورنہ آپ تو اسے بھی بھارت کے حوالے کردیتے۔

خدا ہر اس شخص کا بیڑا غرق کرے جس نے پاکستان کو نقصان پہنچایا، آمین

Facebook Comments
Share This

About yasir

Check Also

پاکستان کے ایٹمی اثاثوں تک امریکا کو رسائی دینے کے لئے بھارت ایران اور افغانستان کیا کر رہے ہیں؟

چوہدری نثار نے اپنے حالیہ انٹرویو میں کہا ہے کہ جنرل راحیل شریف نے ایک …

error: Content is protected !!