Home / International / کیا سعودی عرب کے حفاظتی انتظامات میں مزید اضافے کی ضرورت ہے ؟

کیا سعودی عرب کے حفاظتی انتظامات میں مزید اضافے کی ضرورت ہے ؟

سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض یمن کے حوثیوں کے میزائل حملوں کے بعد سعودی عرب کی زیر قیادت تشکیل دیئے گئے عرب فوجی اتحاد نے ایران کے خلاف انتقامی کارروائی کرنے کی دھمکی دی ہے۔ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے سعودی شہروں پر حوثی باغیوں کے میزائل حملوں کی پرزور مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہافوجیوں میں اضافہ 3 سالہ جنگ ختم کرنے کا کوئی حل نہیں۔سعودی اتحادی افواج نے میزائل حملے پر ایران کو جوابی کارروائی کی دھمکی دی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ہے عرب فوجی اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے ریاض میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ ایران نواز حوثی شدت پسندوں نے سعودی عرب پر سات میزائل داغے۔ حوثی باغیوں کی جانب سے میزائل حملوں کا مقصد مملکت کو دہشت گردی سے دوچار کرنا، شہریوں کی جانوں کو خطرے میں ڈالنا اور بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانا تھا تاہم سعودی محکمہ دفاع اور عرب اتحادی فوج نے مشترکہ طورپر حوثیوں کے داغے گئے میزائل ہدف تک پہنچنے سے قبل فضا ہی میں تباہ کردئیے۔

کرنل المالکی نے کہا حوثیوں کی طرف سے دشمنانہ اور اندھا دھند میزائل حملوں کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے۔ ایران حوثیوں کی مدد کے ذریعے خطے کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی سازشیں جاری رکھے ہوئے ہے۔
ریاض کے شہری دفاع کے ترجمان میجر محمد الحمادی نے بتایا ریاض کے مختلف رہائشی علاقوں میں تباہ شدہ میزائلوں کے ٹکڑے آ گرے جن سے ایک شخص جاں بحق اور دو زخمی ہو گئے۔ ترجمان کے مطابق ان تینوں افراد کا تعلق مصر سے تھا۔

اتوار کو سعودی اتحاد کی یمن میں فوجی کارروائیوں کے تین سال پورے ہو گئے۔ حوثی باغیوں نے کہا ہے وہ کئی علاقوں کو نشانہ بنا رہے ہیں جن میں ریاض کا بین الاقوامی ہوائی اڈا بھی شامل ہے۔

اتحادیوں کا الزام ہے ایران حوثی باغیوں کی پشت پناہی کر رہا ہے جبکہ ایران اس کی تردید کرتا ہے۔ترکی المالکی نے کہاکہ ”ایران کے حمایت یافتہ حوثی گروپ کا یہ جارحانہ عمل ثابت کرتا ہے ایرانی حکومت اس مسلح تنظیم کی عسکری حمایت جاری رکھے ہوئے ہے“۔

انہوں نے مزید کہا کہ متعدد بیلسٹک میزائل فائر کرنا ایک سنگین پیش رفت ہے۔ ریاض میں عینی شاہدین کا کہنا ہے انہوں نے فضا میں دھماکے سنے اور دھواں دیکھا۔ ایران کا کہنا ہے یہ میزائل حملے سعودی جارحانہ کارروائیوں کے نتیجے میں انفرادی اقدامات ہیں۔

Facebook Comments
Share This

About yasir

Check Also

بھارت کی لیزر، بحری اور سائبر جنگ کی تیاری

پاکستان نے جب جب ایف 16 طیارے خریدنے چاہے تو بھارت نے امریکہ سے احتجاج …

error: Content is protected !!