Home / Pakistan Air Force / پاک نیوی اور پاک فضائیہ کی طرف سے لانگ رینج اینٹی شپ کروز میزائل کا تجربہ

پاک نیوی اور پاک فضائیہ کی طرف سے لانگ رینج اینٹی شپ کروز میزائل کا تجربہ

پاکستان نیوی اور پاک فضائیہ نے زیادہ فاصلے تک مار کرنے والے اینٹی شپ میزائلوں کے کامیاب تجربات کیے ہیں۔

یہ میزائل چین سے حاصل کیا گیا تھا، جو کہ C-802 ہے۔ اس میزائل کو پاکستان نے بھی کی فریگیٹ “F-22P” سے ہدف پر داغ گیا، اس کے بعد اس میزائل نے انتہائی کامیابی سے ہدف کو تباہ کیا، پاکستان نیوی نے چین سے فریگیٹس سے فائر ہونے والے ستر سے زیادہ میزائل حاصل کر رکھے ہیں۔
f 22p frigates pakistan navy

آج کے میزائل تجربات میں سب سے بڑی اور اہم بات یہ ہے کہ پاکستان کے بنائے ہوئے لڑاکا طیارے نے بھی اس لانگ رینج میزائل کو داغا، جے ایف سترہ لڑاکا طیارے سے اس میزائل کو فائر کیا گیا جس کے بعد میزائل ٹھیک ہدف پر گرا، اس میں دو اہم باتیں یہ ہیں کہ پاکستان جے ایف سترہ لڑاکا طیاروں کی نہ صرف تعداد میں اضافہ کئے جارہا ہے بلکہ اس طیارے کو جدید سے جدید تر ٹیکنالوجی سے لیس کیا جا رہا ہے۔
pakistani Fighter Jet

حال ہی میں اس طیارے سے پاک فضائیہ نے زیادہ فاصلے تک فضا سے فضا میں مار کرنے والے ” PL-12″میزائل کا تجربہ کیا تھا، اور اب اس طیارے سے لمبے فاصلے تک مار کرنے والے اینٹی شپ میزائل کا تجربہ کر کے اس طیارے کو ملٹی رول ثابت کردیا ہے, جبکہ دوسری بڑی بات یہ ہے کہ اب پاکستانی نیوی کو میراج طیاروں کے علاوہ جے ایف سترہ طیاروں کی بھی سپورٹ حاصل ہوگی۔

آج کے دن پاکستانی نیوی کے دفاع میں زبردست مظبوطی آئی ہے۔ پاکستان کے میراج طیارے جو کہ پاک نیوی کو سپورٹ کرتے ہیں، انہیں ایگزو سیٹ اینٹی شپ میزائلوں سے لیس کیا گیا ہے، یہ میزائل فرانس کا بنایا ہوا ہے، جبکہ اس کی رینج تقریبا 70 کلومیٹر تک ہے۔
pakistani mirages

جب کہ جے ایف سترہ لڑاکا طیارے سے فائر کیے جانے والا چینی ساختہ “C-802AK” تقریباً 250 کلومیٹر کے فاصلے تک مار کر سکتا ہے، ایسے زیادہ فاصلے تک مار کرنے والے جدید نوعیت کے میزائل کے کامیاب تجربات اس بات کا واضح ثبوت ہیں کہ پاکستان کا لڑاکا طیارہ جدید ٹیکنالوجی سے لیس ہے۔ اور پاکستانی ساختہ ان لڑاکا طیاروں کی بدولت اب نہ صرف فضائی دفاع مضبوط ہو رہا ہے بلکہ نیوی کا دفاع بھی مضبوط ہو رہا ہے۔
JF 17 Long Range Anti ship Missile

پاکستان مستقبل میں اپنی نیوی کو جے ایف سترہ بلاک تھری طیاروں سے لیس کرنے کا ارادہ رکھتا ہے، جوکہ چوتھی اور پانچویں نسل کے میزائلوں سے لیس ہو گا، یہ طیارہ بھی ملٹی رول ہوگا، اس طیارے کو پاک فضائیہ اور پاک نیوی استعمال کریں گی۔

یاد رہے چین سے “C-802AK” اینٹی شپ کروز میزائل تقریبا پچاس سے ستر کے درمیان حاصل کیے ہیں، جن کی تعداد بعد میں بڑھائی جاسکتی ہے، یہ میزائل امیجنگ انفراریڈ سیکر اوردوہرے ڈیٹا لنک کی سہولت سے لیس ہیں، اس میزائل کی خاص بات یہ بھی ہے کہ اسے ہدف پر داغنے کے بعد جب منزل پرواز کرتا ہے تو اس دوران ہدف تبدیل بھی کیا جاسکتا ہے۔ میزائل کا وزن 670 کلو گرام ہے جبکہ اس کے وارہیڈ کا وزن 285 کلو گرام ہے.
pakistan c 802 missile

Facebook Comments
Share This

About yasir

Check Also

نور خان ائر بیس کہاں ہے؟

نور خان ائر بیس کہاں ہے؟ اگر میں یہ کہوں کہ دانشوروں کو سول سپریمیسی …

error: Content is protected !!