Home / International / بھارت کا اگنی 2 بیلسٹک میزائل کا تجربہ

بھارت کا اگنی 2 بیلسٹک میزائل کا تجربہ

نئی دہلی(ویب ڈیسک) جنگی جنون میں مبتلا ہوکر پورے خطے کی سلامتی کو داؤ پر لگانے والے بھارت نے درمیانے فاصلے پر مار کرنے والے بیلسٹک میزائل اگنی 2 کا تجربہ کیا ہے.

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں جوہری ہتھیار بنانے والے ادارے اسٹریٹیجک فورس کمانڈ نے درمیانی فاصلے تک مار کرنے والے (انٹر میڈیٹ رینج) بیلسٹک میزائل اگنی 2 کا تجربہ کیا ہے، یہ تجربہ بھارتی ریاست اڑیسہ کے جزیرے اے پی جے عبدالکلام آئی لینڈ میں کیا گیا ہے۔

اگنی 2 کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ بیلسٹک میزائل 2 ہزارکلومیٹر دُور تک اپنے ہدف کو نشانہ بناسکتا ہے اور اس کی زیادہ سے زیادہ حد کو 3 ہزار کلومیٹر تک لایا جاسکتا ہے، زمین سے زمین پر مار کرنے والا یہ میزائل ایک ٹن تک روایتی اور جوہری وارہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔
واضح رہے کہ 20 میٹر طویل اگنی 2 کو انٹیگریٹڈ گائیڈڈ میزائل ڈیویلپمنٹ پروگرام کے تحت تیار کیا گیا ہے جبکہ یہ 1999 سے بھارتی فوج کے اسلحہ خانے میں شامل ہے۔
Agni 2 test

اصل میں بھارت کے پرانے میزائل ہدف کو سو فیصد نشانہ لگانے کے قابل نہیں تھے، یہ بات پوری دنیا جانتی ہے کہ بھارت کا کوئی بھی میزائل تجربے کے دوران ہدف کے 1000 میٹر دور تک بھی نہیں گرا, بھارت کو اس حوالے سے ایک عرصے سے ناکامی کا سامنا رہا۔

پاکستانی سائنسدانوں کا یہ دعویٰ ہے کہ بھارت پاکستان کے شہروں کو چن کر نشانہ نہیں لگا سکتا کیونکہ بھارتی میزائل ہدف سے کوسوں دور جا کر گرتے ہیں بھارت کے ان میزائلوں کے تجربات کو مدنظر رکھتے ہوئے اس بات کا اندازہ لگایا گیا ہے کہ اگر بھارت اسلام آباد پر اپنا بیلسٹک میزائل داغتا ہے تو وہ میزائل راولپنڈی یا روات میں جا کر گرے گا۔
indian missile test

بھارت کو نئے سٹریٹیجک پارٹنر مل چکے ہیں اور وہ دو پارٹنر ملک امریکہ اور اسرائیل ہیں، بھارت چاہتا ہے کہ اس کے پرانے میزائلوں کو جدید ٹیکنالوجی سے لیس کرکے اس قابل بنایا جائے کہ ہدف کو ٹھیک طرح سے تباہ کرسکیں، اگنی دوئم کا تجربہ بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جو کہ پہلے ہی تقریبا سترہ سالوں سے فوج کو دے رکھا تھا۔

بھارت کا اگنی 5 جدید ترین بیلسٹک میزائلوں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے جس کی رینج تقریبا پانچ ہزار کلو میٹر سے بھی زیادہ ہے، یہ میزائل بھارت نے خاص طور پر چین کے لیے تیار کیا ہے، اس میزائل کی تیاری میں امریکہ یا پھر اسرائیل کا بہت بڑا کردار ہو سکتا ہے، کیونکہ بھارت اپنے بل بوتے پر ایسے میزائل بنانے کا اہل نہیں ہے۔
indian ballistic missile

یاد رہے پاکستان کے بیلسٹک میزائل ہدف کے 50 سے 100 میٹر نزدیک گرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں،ایک بیلسٹک میزائل کا سو میٹر کے دائرے میں گرنا بہت معنی خیز ہوتا ہے، جبکہ پاکستان کے کروز میزائل ایک کھڑکی کو بھی نشانہ لگانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

پاکستان کے بیلسٹک اور کروز میزائلوں کی ٹیکنالوجی بھارت کے میزائلوں کے مقابلے میں بہت بہتر ہے، یہاں تک کہ پاکستان کے ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر ثمر مبارک مند کا دعویٰ ہے کہ پاکستان میزائل ٹیکنالوجی میں تیسرے نمبر پر ہے۔
ababeel

 

Facebook Comments
Share This

About yasir

Check Also

بھارت کی لیزر، بحری اور سائبر جنگ کی تیاری

پاکستان نے جب جب ایف 16 طیارے خریدنے چاہے تو بھارت نے امریکہ سے احتجاج …

error: Content is protected !!