Home / International / فلم پدما وتی اورحقیقت میں ہندوستان سے مسلمانوں کی جنگیں

فلم پدما وتی اورحقیقت میں ہندوستان سے مسلمانوں کی جنگیں

انڈیا اب پاکستان سے اور اس سے قبل 1000 سالوں سے ہندو جو جو جنگیں مسلمانوں سے ہاریں ہیں اور 100 سال تک مسلمانوں نے برصغیر پے حکومت کی ہے اب وہ جنگیں وہ تاریخ انڈیا فلموں میں جیتنا چاہیتا ہے اور دکھا رہا ہے کہ انہوں نے جنگیں جیتیں تھی اپنی پروپیگینڈا مشین کے ذریعے….

ایک نئی فلم آ رہی ہے انڈیا کی پدموتی Padmawati کے نام سے تو کچھہ دوستو نے مجھے بتایا اسے کے بارے میں, کیونکہ مجھے انڈین فملمیں گانے ,اور گھٹیا انڈین فحاشی اور کلچر دیکھنے کا کوئی شوق نہیں اور پھر فلم کا جب ٹریلز دیکھا اور اسکی کھانی پڑھی تو حیرت ہوئی کس طرح تاریخ کو توڑ مروڑ Distort کرکے کے فلم میں پیش کیا گیا ہے…

پہلے تو آتے ہیں جو فلم میں دکھایا گیا ہے اسکی کہانی پے پھر فلم کی حقیقت کو بیان کرتے ہیں اور تاریخ کیا کہتی ہے جاکو تبدیل کیا گیا ہے اس فلم میں..

” فلم میں یہ دکھایا گیا ہے کہ ملسمان حکمران علاؤ الدین خلجی جو, خلجی سلطنت کا حکمران تھا 1296 سے لیکے 1316 تک ایک وحشی تھا ظالم حکمران تھا, یہاں تک کہ ہم جنس پرست تھا اسکے غلط تعلقات تھے اپنے ایک گورنر ملک کافور سے , اور دوسری طرف ہندو راجپوت بادشاہ راجہ رتن سین Raja Ratansen بڑا بھادر تھا, اسکی ایک بیوہ تھی رانی پدموتی جو بڑی خوبصورت تھی…

جسکی خوبصورتی کو سن کے علاو الدین پاگل ہوگیا اور 1303 میں چتور گڑھہ Chittor garh قلعے پے حملہ کردیا اور راجہ رتن سین بڑا مقابلہ کرتا رہا پر علاؤ الدین خلجی کی فوج زیادہ تھی اور راجہ رتن سین اسی وجہ سے مارا گیا اور رانی پدموتی نے سب کنیزوں اور عورتوں کے ساتھہ مل کے جوھر کرلیا یعنی ایک آگ میں سب عورتیں نے مل کے رانی پدموتی کے ساتھہ جلا دیا پر علاؤ الدین کی نہیں ہوئی….”

یہ ہے فلم کی کہانی جسکے ذریعے تاریخ کو توڑا گیا ہے اب زرا حقیقت کو کھولتے ہیں, تاریخ یہ کہتی ہے رانی پدموتی کے نام سے کوئی کردار Character تاریخ میں exist ہی نہیں کرتا ,بلکہ یہ ایک خیالی کردار تھا جسکو گھڑا گیا تھا ایک شاعر کی طرف سے اس شاعر کا نام جیسی Jayasi تھا, جس نے رانی پدموتی کے نام سے کردار گھڑا تھا 1550 میں اپنی ایک کتاب پدموت Padmawat میں مغل بادشاہ اکبر کے زمانے میں یعنی تقریباً علاؤ الدین خلجی کے 250 سال بعد…

دوسری حقیقیت تاریخ یہ کہتی ہے ہندو راجپوت بادشاہ جسکو بھادر دکھایا گیا ہے اس فلم میں جب چتور گڑھہ chittor garh قلعے کا محاصر کیا 1303 میں اور 8 مہینوں تک علاو الدین خلجی ( پیدائش 1266- وفات 1316 ع ) نے محاصرہ جاری رکھا تو , 8 مہینے بعد جب جنگ لگی قلعے کے باہر تو راجہ رتن سین مارا نہیں گیا تھا بلکہ جنگ چھوڑ کے بھاگ گیا تھا شکست کھا کے اپنی خاندان کو پیچھے قلعے میں چھوڑ کے علاؤ الدین خلجی سے بچنے کے لیئے…

تیسری حقیقت دنیائے اسلام کا ایک بہت بڑا بزرگ اور صوفی شاعر اور اردو زبان کو تخلیق کرنے والا اور سلطان الہند حضرت نظام الدین اولیاء رح کا ایک محبوب ترین مرید حضرت امیر خسروہ رح , جو حضرت نظام الدین اولیاو کا مرید بننے سے پہلے خلجی سلطنت کی دربار میں رہا تھا اور شاعری اور تاریخ نویسی لکھتا تھا…

حضرت خسروہ رح پہلے علاو الدین خلجی کے چاچا اور سسر father in law جلال الدین خلجی کے یہاں پہلے رہا اسکی فتوعات لکھتا رہا اور شاعری کرتا رہا پھر جب علاو الدین خلجی تخت نشین ہوا 1296 میں تو تب حضرت امیر خسرو رح علاؤ الدین خلجی کے ساتھہ تھا اور فتوعات لکھتا رہا…..

1303 میں جب چتوڑ گڑھہ فتح علاو الدین خلجی کے ہاتھوں تو حضرت امیر خسروہ اسکے ساتھہ تھا جب قلعے کے اندر داخل ہوئے, پوری اس نے تاریخ اپنے کتاب خزائن الفتوح Khazan ul futuh میں درج کیا ہے کہ جب قلعہ فتح ہوا تو میں علاو الدین کے ساتھہ تھا اور راجہ رتن سین کی خاندان کو معافی دی گئی تھی جب کہ 30 ہزار ہندوں کو مارا گیا تھا قلعے کے فتح کے دوران, اس کتاب میں کہیں بھی رانی پدموتی کا ذکر ہی نہیں بلکہ ایسا کوئی کردار ہی نہیں تھا…

چوتھی بڑی حقیقت کہ چتوڑ گڑھہ قلعے پے یلغار علاؤ الدین کہ طرف سے اس وجہ سے ہوئی تھی کہ یہ قلعے راجپوتوں کا سب سے بڑا مضبوط قلعہ تھا اور سلطان علاؤ الدین کی دھلی سلطنت کو خطرا تھا اور سلطان پوری برصغیر کی حکومت چاہتا تھا, اسی وجہ سے اس نے قلعے پے یلغار کی تھی نہ کہ رانی کی وجہ سے جسکا کوئی وجود ہی نہیں تھا, ایک شاعر نے گھڑا اس کردار کو 250 سال بعد…

سلطان علاؤ الدین خلجی مضبوط ترین حکمران تھا برصغیر کا اپنے چچا جلال دین خلجی کے بعد ,بلکہ سلطان علاؤ دین ہی تھا جس نے اس طرف منگولوں کو بدترین شکات دی تھی, جرن منجور میں 1297 اور 1298 میں جسکی وجہ منگول یلغار برصغیر کی طرف نہیں بڑھہ سکی تھی, اسکے بعد سلطان علاو الدین فتوحات پے فتوحات کرتا گیا, 1298 میں سیوستان Sivistan فتح کیا…

1299 میں کلی فتح کیا, دھلی 1303 میں اسکے بعد چتور گڑھہ, امروہا 1304 میں منگولوں کو راوی کنارے شکست دی جس کے بعد افغانستان کی طرف منگول نہیں بڑھہ سکے…

اور ہندو راجپوت اتنے بھادر بھی نہیں تھے شاید وہ بدترن شکست ترائن Tarain کی جنگ میں بھول گئے ہیں جس می ںشہاب الدین غوری رح نے پرتوی راج prithvi raj چوہان کو شکات دی تھی 1192 میں, ہندو راجپوت 3 لاکھہ تھے اور شہاب الدین غوری کی فوج ایک لاکھہ بیس ہزار فقط, آج ہمارے ایٹم بم کا نام بھی غوری ہے اور انکی ایٹم بم کا نام پرتیوی…

اس فلم کے خلاف انڈیا میں بھی بہت زیادہ احتجاج ہوئے ہیں راجپوتوں کی طرف سے اور دیگر ہندوں اور ملسمانوں کی طرف سے تاریخ کو توڑ مروڑ کے پیش کرنے کی وجہ سے اور ریلیز ہونے سے پہلے ہی فلم تنازعات کا شکار ہے, یہاں تک اس فلم کے ڈاریکٹر اور ہیروئن کو سر قلم کرنے کا انعام ہندو راجپوتوں نے 5 کروڑ رکھا ہے ,خود انڈین میڈیا کہہ رہا ہے کہ تاریخ کو بدلا گیا ہے…

ویسے یہ طریقہ فلمی اور میڈیا پروپیگینڈا کا را Raw نے امریکی دھشتگرد ایجنسی سی آئی اے CIA اسرائیلی ایجنسی موساد Mossad سے سیکھا ہے کہ لوگوں کے ذھنوں کو جھوٹ پروپیگینڈا کے ذریعے جھوٹی فلمیں بنا کے بدلو, ہالی ووڈ بھی یہی کرتا آیا ہے آج تک صہیونی یہودی جھوٹ بول کے فلموں میں لوگوں کے ذھنوں کو بدلتے ہیں…

اور یہی طریقہ انڈین ایجنسی را اپناتی ہے بہت بڑی فنڈنگ کرکے ڈاریکٹرز کو خریدا جاتا ہے جھوٹ فلموں میں دکھایا جاتا ہے….

پاکستان کے خلاف, مسلمانوں کے خلاف انڈین فلموں میں, دو قومی نظریہ کو تباہ کرنے کی کوشش کی جاتی ہے, اس کی چند مثالوں میں کئی انڈین مویز ہیں جیسے کہ گارگل انڈین مووی, اس سے قبل بارڈر ,ایک تھا ٹائیگر, بجرنگی بھائی جان,ایل او سی, ایجنٹ ونود, فینٹم , حیدر, لسٹ بہت لمبی ہے گوگل کرسکتے کو آپ..

اسی کو آج کے دور میں Disinformation warfare کہتے ہیں, میڈیا پروپیگینڈا کہتے ہیں, اور آج کی جنگوں میں دشمن کا سب سے بڑا ہتھیار ہے یہ لوگوں کے ذھنوں کو بدلنا جھوٹ کے ذریعے, غلط معلومات کے ذریعے, اسی کے خلاف ہم کئی سالوں سے لڑ رہیے ہیں سوشل میڈیا پے…

اور معصوم لوگ کہتے ہیں عجیب منطق دے کے یار فلم ہے جسٹ پر بعد میں جالے سوچیں اس ہتھیار سے ان کے ذھن تبدیل ہوتے ہیں یا نہیں, آج ہندو کلچر کس طرح عام جام ہوچکا ہے آپکے بچوں میں ان مویز کے ذریعے زرا سوچنا آپ سب اس پے.

Facebook Comments
Share This

About yasir

Check Also

بھارت کی لیزر، بحری اور سائبر جنگ کی تیاری

پاکستان نے جب جب ایف 16 طیارے خریدنے چاہے تو بھارت نے امریکہ سے احتجاج …

error: Content is protected !!