Home / Pakistan Army / جب 1974 میں آئی ایس آئی نے بھارت کا خفیہ جنگی ہوائی اڈے کو تباہ کیا

جب 1974 میں آئی ایس آئی نے بھارت کا خفیہ جنگی ہوائی اڈے کو تباہ کیا

غازی ابوشجاع ابو وقار جناب سلیم عباس صاحب لکھتے ہیں کہ جب 1974ء میں انہوں نے آئی ایس آئی میں رہتے ہوئے بھارت میں جاسوسی کے دوران ایک صوابدیدی مشن سےگورگھ پور میں موجود پہاڑوں کے اندر قائم ایک جنگی ہوائی اڈا اور بیسیوں جہاز انکے کریو سمیت ٹائم بموں کی مدد سے صرف 5 افراد کے ساتھ تباہ کردیا تھا۔

وہ اپنی آپ بیتی میں رقم طراز ہیں کہ ہم نے اس مشن کو کامیابی سے بغیر کوئی مالی و جانی نقصان کے بخیر و عافیت انجام تک پہنچایا اور واپس دہلی آگئے اور واپس آکر ایک ہفتے تک ہم نے بھارت کے سبھی اخبار بلا ناغہ دیکھے مگر اس تباہی کا ذکر کسی اخبار کسی میڈیا نے نہیں کیا۔

لیکن پھر ایک ہفتے بعد ٹائمز آف انڈیا اور ہندو اخبار نے اس واقعے پر محتاط اداریئے تحریر کیئے۔
ہندو اخبار نے اس حادثے کو سیفٹی سے منسلک کیا نا کہ کسی بیرونی طاقت اور ایجنسی کی کارستانی۔

جبکہ ٹائمز آف انڈیا نے تھوڑی ہمت دکھائی اور قیاس کے لبادے میں اپنا موقف دیا کہ 150 افراد کا گورکھ پور ہوائی اڈے میں جل کر بھسم ہوجانا کوئی حادثہ نہیں بلکہ آئی ایس آئی کا کاری وار ہے جس پر آئی ایس آئی شاباش کی مستحق ہے باوجود اسکے کہ وہ ہماری دشمن ہے۔

شاباش اس لیئے کہ اس ہوائی اڈے کی صحیح لوکیشن اور اندر موجود حفاظتی بندوبست سے تو کئی خفیہ بھارتی ایجنسیاں بھی واقف نہیں تھیں پھر بھی ایک لٹے پٹے اور تازہ غم شدہ ملک کی ایک غریب ایجنسی نے وہ کارنامہ انجام دے دیا جسکا بھارت نے خواب میں بھی اندازہ نہیں لگایا تھا۔

تب اندرا حکومت نے بٹھو سے اس پر خاموش احتجاج کیا تھا اور بھٹو کی آئی ایس آئی اور آرمی سے بہت سی اندرونی لڑائیوں میں سے یہ بھی ایک لڑائی تھی۔
جبکہ دراصل یہ مشن کرنے کا براہ راست حکم اور خواہش تک آئی ایس آئی کی نہیں تھی سوائے ہلکی پھلکی آؤٹ ڈیٹڈ انفارمیشن کے جو سلیم عباس عرف ونود کو بھارت میں بھیجنے سے قبل دوران تربیت دی گئی تھی۔

جس کے بل بوتے پر اس مرد مجاہد نے نیت باندھی اور مشن انجام دینے نکل کھڑا ہوا۔
بعد میں ڈی بریفنگ میں تب کی آئی ایس آئی قیادت نے بھٹو کو مطمئن کرنے کی خاطر سلیم عباس کی صرف محکمہ جاتی حکم عدولی پر ہلکی سی سرزنش کی بظاہر مگر اندرون کھاتے ماتھا چوم کر خراج عقیدت دیا۔

Facebook Comments
Share This

About yasir

Check Also

جنرل اسد درانی کا اصل چہرہ : زید حامد

جنرل درانی کی کتاب پر مجھے کوئی تجزیہ کرنے کی ضرورت اس لیے نہیں ہے …

711 comments

  1. buy cialis online without a prescription
    [url=http://cialisambrx.com/#]buy cialis online[/url]
    cialis 20 mg tablets
    buy cialis online
    cialis 20 mg online

  2. Hiya, I’m really glad I have found this info. Today bloggers publish only about gossip and web stuff and this is actually frustrating. A good blog with interesting content, this is what I need. Thanks for making this web site, and I will be visiting again. Do you do newsletters by email?

  3. Hey there. I found your website via Google whilst searching for a comparable matter, your web site got here up. It appears good. I’ve bookmarked it in my google bookmarks to visit then.

  4. Very nice article and straight to the point. I don’t know if this is actually the best place to ask but do you people have any ideea where to get some professional writers? Thanks in advance 🙂

  5. Hello there. I discovered your site by the use of Google while searching for a similar matter, your site got here up. It appears to be good. I have bookmarked it in my google bookmarks to come back then.

  6. I’m very happy to read this. This is the kind of manual that needs to be given and not the accidental misinformation that is at the other blogs. Appreciate your sharing this best doc.

  7. cialis generic walgreens
    [url=http://cialisambrx.com/#]generic cialis online[/url]
    voucher cialis generic drugs buy
    online cialis
    cialis coupons

  8. buy geneВ­ric ciaВ­lis
    [url=http://cialisambrx.com/#]cheap cialis online[/url]
    official site cialis pills
    buy cheap cialis
    cialis buy uk

  9. real cialis pills cialis
    [url=http://cialisambrx.com/#]cheap cialis online[/url]
    buying generic cialis
    buy cialis online
    generic cialis without prescription

  10. I¡¦ve recently started a web site, the info you offer on this web site has helped me tremendously. Thank you for all of your time & work.

  11. Awesome write-up. I’m a normal visitor of your blog and appreciate you taking the time to maintain the nice site. I will be a regular visitor for a long time.

error: Content is protected !!